فرد جرم عائد کرنا ہے اپنی ذات بتائیں جج کا استسفار سندھی ہوں سابق صدر کا جواب

اسلام آباد ( نیوز ٹائم اپڈیٹس ) پارک لین ریفرنس میں فرد جرم کی کارروائی کے دوران احتساب عدالت کے جج اعظم خان نے سابق صدر آصف علی زرادری سے استفسار کیا کہ آپ کی کاسٹ کیا ہے احتساب عدالت اسلام آباد کے جج محمد اعظم خان نے پارک لین ریفرنس کی سماعت کی آصف زرداری ویڈیو لنک کے ذریعے بلاول ہاﺅس کراچی سے عدالت میں پیش ہوئے

عدالت نے آصف علی زرداری سمیت10 ملزمان پر فرد جرم عائد کی احتساب عدالت کے جج اعظم خان نے سابق صدر سے استفسار کیا کہ آپ کی کاسٹ کیا ہے فرد جرم میں لکھنی ہے آصف علی زرداری نے جواب دیا کہ میں سندھی ہوں سندھ سے نمائندگی کرتا ہوں عدالت نے سابق صدر سمیت دس ملزمان اور تین کمپنیوں پر فرد جرم عائد کی ہے سابق صدر آصف علی زرداری نے عدالت میں جواب دیا کہ میں تمام الزامات مسترد کرتا ہوں میرے وکیل سپریم کورٹ میں ہیں ان کے بغیر فرد جرم عائد نہیں کی جا سکتی

جج اعظم خان نے کہا کہ فرد جرم آپ پر عائد کی جائے گی اگر آپ کے وکیل نہیں آتے تو ہم ان کی غیرحاضری لگائیں گے میں کسی وکیل کو زبردستی عدالت نہیں بلا سکتا ہم آرڈر میں لکھیں گے کہ فرد جرم عائد کرتے وقت وکیل نہیں تھے قبل ازیں احتساب عدالت نے سابق صدر آصف علی زرداری پر ویڈیو لنک کے ذریعے پارک لین ریفرنس میں فردِ جرم عائد کی اور سابق صدر نے عدالت میں صحت جرم سے انکار کر دیا ہے عدالت نے سابق صدر سمیت دس ملزمان اور تین کمپنیوں پر فرد جرم عائد کی کمپنیوں پر نمائندوں کے ذریعے فردجرم عائد کی گئی مذکورہ کمپنیوں میں پارک لین کمپنی پارتھینون کمپنی اور ٹریکم پرائیویٹ لمیٹڈ شامل ہیں

اپنا تبصرہ بھیجیں