2

عاصم باجوہ کا استعفیٰ منظور کرتے خود بھی مستعفی ہونا پڑتا مریم نواز

اسلام آباد ( نیوز ٹائم اپڈیٹس) وزیراعظم کیجانب  سے عاصم سلیم باجوہ کے استعفیٰ منظور نا کیے جانے پر بذریعہ ٹوئٹ اپنے رد عمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا عاصم باجوہ کا استعفیٰ منظور کرتے تو خود کو بھی مستعفی ہونا پڑتا

تفصیلات کیمطابق مریم نواز کا کہنا ہے احتساب کا بیانیہ اپنی موت آپ مر گیا استعفی منظور کر لیتے تو خود بھی مستعفی ہونا پڑ جاتا  این آر او کیوں اور کیسے دیا جاتا ہے کس کو دیا جاتا ہے ایک دوسرے کو دیا جاتا ہے قوم کو سمجھانے کا شکریہ جواب تو پھر بھی دینا پڑے گا اب لو گے احتساب کا نام

یاد رہے کہ گذشتہ روزعاصم سلیم باجوہ نے وزیراعظم کے معاون خصوصی کے عہدے سے مستعفی ہونے کا اعلان کیا تھا، چئیرمین سی پیک اتھارٹی کا کہنا ہے کہ اہل خانہ کے ساتھ طویل مشاورت کے بعد فیصلہ کیا کہ صرف ایک عہدہ رکھ کرسی پیک منصوبے پر بھرپور توجہ دوں  اسی لیے معاون خصوصی اطلاعات کا عہدہ چھوڑنے کا فیصلہ کیا ہے تاہم وزیراعظم نے استعفیٰ قبول کرنے سے انکار کرتے ہوئے کہا عاصم سلیم باجوہ کیجانب سے پیش کی جانے والی وضاحت سے مطمئن ہوں وہ بطور معاون خصوصی برائے اطلاعات اپنا کام جاری رکھیں

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں