امام مسجد 15 سال تک بچوں کو مسجد میں زیادتی کا نشانہ بناتا رہا

لاہور (نیوز ٹائم اپڈیٹس) امام مسجد قاری طاہر شاہ اور اسکا بھائی فرار ہو گئے جب کہ پولیس نے مقدمہ درج کرکے تحقیقات شروع کردی

تفصیلات کے مطابق  امام مسجد پندرہ سال تک مسجد میں بچوں کو مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بناتا رہا ویڈیو سامنے آگئی بیرسٹر حسان نیازی کے مطابق لاہورماڈل ٹاؤن ایس بلاک کی جامع مسجد نورانی کا امام مسجد قاری طاہر شاہ مبینہ طور پر 15 سال تک بچوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنتا رہا ہے اس حوالے سے ایک ویڈیو بھی سامنے آئی ہے جس میں مبینہ امام مسجد کو بچے کے ساتھ زبردستی کرتے ہوئے دیکھا جاسکتا ہے

اس حوالے اس علاقے کا ایک اور نوجوان سامنے آیا ہے جس نے انکشاف کیا ہے کہ جب وہ 5ویں جماعت میں پڑھتا تھا اور اس کی عمر 12سال تھی تو اس وقت اسی شخص نے اسے زیادتی کا نشانہ بنایا تھا اور اسے کئی بار زیادتی کا نشانہ بنایا گیا تھا اور قاری نے اسے اور کسی کو بتانے کی صورت میں سنگین نتائج کی دھمکیاں بھی دیی تھیں

بیرسٹر حسان نیازی کے مطابق قاری طاہر شاہ اور اسکا بھائی فرار ہوگئے ہیں جبکہ پولیس نے مقدمہ درج کر کے تحقیقات شروع کردی ہیں ذرائع کے مطابق قاری نے ضمانت کے لیےعدالت سے رجوع کر رکھا ھے

اپنا تبصرہ بھیجیں