اسرائیل امارات امن معاہدے کی حمایت کے لیے سعودی عرب کو منانے کی کوششیں تیز

ریاض ( نیوز ٹائم اپڈیٹس) متحدہ عرب امارات اور اسرائیل میں امن معاہدہ طے پانے کے بعد کئی خلیجی ممالک نے اس کی حمایت کی ہے تا ہم سعودی عرب نے یہ کہ کر انکار کر دیا کہ جب تک اسرائیل فلسطین کیساتھ امن معاہدہ نہیں کرے گا اور فلسطین کو ایک آزاد ریاست تسلیم نہیں کرے گا تب تک سعودی عرب اسرائیل کیساتھ سفارتی تعلقات قائم نہیں کرے گا

 تاہم ایک امریکی جریدے کی جانب سے اپنی رپورٹ میں کہنا ہے کہ امریکی صدر کی جانب سے اسرائیل سے خوشگوار تعلقات قائم کرنے کے لیے سعودی عرب کو قائل کرنے کے لیے بھرپور کوششیں شروع کر دی گئی ہیں

مریکی حکام اس کوشش میں ہیں کہ سعودی عرب کی جانب سے اسرائیل امارات امن سمجھوتے کی حمایت میں بیان دلوایا جائے اسرائیل اور امارا ت کے درمیان کمرشل فلائٹس کا سلسلہ شروع کیا جا رہا ہے جس کے لیے اسرائیل کی جانب سے سعودی عرب سے درخواست کی ہے کہ اس کے طیاروں کو امارات پہنچنے کے لیے سعودی فضائی حدود کو استعمال کرنے کی اجازت دی جائے تاہم اس بارے میں سعودی حکام کی جانب سے ابھی تک کوئی بیان سامنے نہیں آیا

اپنا تبصرہ بھیجیں